زبان کا انتخاب
همارے ساتھ رهیں...
مقالوں کی ترتیب جدیدترین مقالات اتفاقی مقالات زیادہ دیکھے جانے والے مقالیں
■ سیدعادل علوی (24)
■ اداریہ (14)
■ حضرت امام خمینی(رہ) (7)
■ انوار قدسیہ (14)
■ مصطفی علی فخری
■ سوالات اورجوابات (5)
■ ذاکرحسین ثاقب ڈوروی (5)
■ ھیئت التحریر (14)
■ سید شہوار نقوی (3)
■ اصغر اعجاز قائمی (1)
■ سیدجمال عباس نقوی (1)
■ سیدسجاد حسین رضوی (2)
■ سیدحسن عباس فطرت (2)
■ میر انیس (1)
■ سیدسجاد ناصر سعید عبقاتی (2)
■ سیداطہرحسین رضوی (1)
■ سیدمبین حیدر رضوی (1)
■ معجز جلالپوری (2)
■ سیدمہدی حسن کاظمی (1)
■ ابو جعفر نقوی (1)
■ سرکارمحمد۔قم (1)
■ اقبال حیدرحیدری (1)
■ سیدمجتبیٰ قاسم نقوی بجنوری (1)
■ سید نجیب الحسن زیدی (1)
■ علامہ جوادی کلیم الہ آبادی (2)
■ سید کوثرمجتبیٰ نقوی (2)
■ ذیشان حیدر (2)
■ علامہ علی نقی النقوی (1)
■ ڈاکٹرسیدسلمان علی رضوی (1)
■ سید گلزار حیدر رضوی (1)
■ سیدمحمدمقتدی رضوی چھولسی (1)
■ یاوری سرسوی (1)
■ فدا حسین عابدی (3)
■ غلام عباس رئیسی (1)
■ محمد یعقوب بشوی (1)
■ سید ریاض حسین اختر (1)
■ اختر حسین نسیم (1)
■ محمدی ری شہری (1)
■ مرتضیٰ حسین مطہری (3)
■ فدا علی حلیمی (2)
■ نثارحسین عاملی برسیلی (1)
■ آیت اللہ محمد مہدی آصفی (3)
■ محمد سجاد شاکری (3)
■ استاد محمد محمدی اشتہاردی (1)
■ پروفیسرمحمدعثمان صالح (1)
■ شیخ الاسلام ڈاکٹر محمد طاہرالقادری (1)
■ شیخ ناصر مکارم شیرازی (1)
■ جواہرعلی اینگوتی (1)
■ سید توقیر عباس کاظمی (3)
■ اشرف حسین (1)
■ محمدعادل (2)
■ محمد عباس جعفری (1)
■ فدا حسین حلیمی (1)
■ سکندر علی بہشتی (1)
■ خادم حسین جاوید (1)
■ محمد عباس ہاشمی (1)
■ علی سردار (1)
■ محمد علی جوہری (2)
■ نثار حسین یزدانی (1)
■ سید محمود کاظمی (1)
■ محمدکاظم روحانی (1)
■ غلام محمدمحمدی (1)
■ محمدعلی صابری (2)
■ عرفان حیدر (1)
■ غلام مہدی حکیمی (1)
■ منظورحسین برسیلی (1)
■ ملک جرار عباس یزدانی (2)
■ عظمت علی (1)
■ اکبر حسین مخلصی (1)

جدیدترین مقالات

اتفاقی مقالات

زیادہ دیکھے جانے والے مقالیں

مشرق وسطی میں مقاومتی بلاک کی کامیاب پوزیشن۔ مجلہ عشاق اہل بیت 16و17۔ربیع الثانی1438ھ

مغربی استعمار کی توسیع پسندانہ عسکری یورش اور جارحانہ ثقافتی یلغار نے مستضعف قوموں کو non aligned movement جیسے counter forum اور اسلامی مقاومتی بلاک جیسے تزویراتی اتحاد کی تشکیل پر مجبور کر دیا ہے جو مشرق وسطی میں مغرب اور اس کے اتحادیوں کو شکست سے دوچار کر رہا ہے،سامراجی قوتیں استقامتی بلاک کو داخلی خلفشار کی خلیج میں دھکیلنے کے لیے اپنے حلیف ممالک اور خطے کے ضمیر فروش عرب لیڈروں کو 34 ملکی اتحاد کا برگ حشیش دے کر مسلم دنیا کی آنکھوں میں war on terror کی دھول جھونکنا چاہتی ہیں لیکن یہ پالیسی غیر متوقع حد تک ناکام ہوتی نظر آ رہی ہے کیونکہ مقاومتی بلاک کے تزویراتی اقدامات زیادہ موئثر اور فیصلہ کن نتائج رکھتے ہیں اور عرب خطے کی عوامی قوتیں مغرب کے اخلاقی دوھرے پن اور انسانی حقوق کے پرفریب نعروں کو تہذیبوں کے تصادم جیسے انتہاپسندانہ پس منظر کی حامل نفسیاتی جنگ کے حربے کے طور پر دیکھتی ہیں یہی وجہ ہے کہ اسلام کے خلاف استعماری قوتوں کا منفی پروپیگنڈا عالمی سطح پر نہ صرف فلاپ ہوا ہے بلکہ معکوس نتائج دینے لگا ہے اور پسماندہ ترین سیاسی نظام رکھنے والے عرب ممالک کی رائے عامہ مغربی استکبار کے سیاسی دوغلے پن کو جمہوریت مخالف رویے کے طور پر لیتی ہے۔ ... باقی مطلب

معلم و متعلم کے آداب و فرائض۔مجلہ عشاق اہل بیت 16و17۔ربیع الثانی1438ھ

سلام علم و تعلیم کی اہمیت کا بہت زیادہ قائل ہے یہاں تک کہ قرآن مجید میں سب سے پہلے جس نعمت کا تذکرہ کیا ہے وہ نعمت علم ہے جیسا کہ ابتدائی وحی حضور اکرم پر نازل ہوئی تو اس میں یوں علم کی اہمیت کو بیان فرمایا ہے : علَّمَ الْانسَانَ مَا لَمْ يَعْلَم[1] (اور انسان کو وہ باتیں سکھائیں جس کا اس کو علم نہ تھا)اور جس فریضے کی اسلام نے زیادہ اہمیت بیان کیا ہے اس آداب و فرائض کی طرف بھی اس دین مبین نے ایک خاص توجہ دی ہے کیونکہ کام جس قدر اہمیت والا ہو اس کو صحیح طور پر انجام دینے کےلئے خصوصی آداب و رسوم کی ضرورت ہوتی ہے تاکہ اس کی انجام دہی میں کوئی کوتاہی انسان سے سرزد نہ ہو اور جس قدر اس کام کی انجام دہی کے راہ میں انسان کوتاہی سے محفوظ رہے گا وہ اس کام کے ہدف کو حاصل کرنے میں زیادہ کامیاب رہے گا لہٰذا جو کوئی علم و معرفت کی وادی میں قدم رکھنا چاہتا ہے تو اس کو اس بڑے فریضے کی انجام دہی سے پہلے اس کے آداب و فرائض سے آگاہ ہونا ضروری ہے ۔ ہم نے اسی ہدف کو پیش نظر رکھ کر تعلیم و تعلم کی وادی میں جدید قدم رکھنے والوں کے لئے تذکراً علماءاور بزرگان کے بیان کردہ کچھ آداب و فرائض کی طرف اشارہ کرنے کی کوشش کی ہے۔ ... باقی مطلب

ولایت وعاشورا۔ مجلہ عشاق اہل بیت 16و17۔ربیع الثانی1438ھ

" يَا أَيُّهَا الَّذِينَ آمَنُواْ أَطِيعُواْ اللّهَ وَأَطِيعُواْ الرَّسُولَ وَأُوْلِي الأَمْرِ مِنكُمْ"[1] اے ایمان والو!اللہ کی اطاعت کرواوررسول کی اطاعت کرواورتم میں سے جوصاحبان امرہے ان کی اطاعت کرو۔اطیعواللہ اللہ کیاطاعت کرلویعنی"الزمواطاعۃ اللہ فیماامرکم ونہاکم عنہ"جن چیزوں کے بارے میں خدانے امرکیاہے اورجن چیزوں کے بارے میں خدانے نہی کی ہے ان میں خداکی اطاعت کرنے کواپنے اوپرلازم قراردے دو۔ ... باقی مطلب

ندائے فطرت! مجلہ عشاق اہل بیت 16و17۔ربیع الثانی1438ھ

جب انسان اس عالم ہست و بود میں آنکھیں کھولتاہے تو اس کا ذہن کورے کاغذ کی طرح باکل صاف وشفاف ہوتاہے۔لیکن جیسے جیسے وہ اپنی حیات کے زینے طے کرتاہے،اس کے احسا س کی دنیا و سیع ہوتی جاتی ہے اور پھر لوگوں کے افعال و اطوار کو اپنے آپ میں بساتا چلاجاتاہے۔وہ اپنے پاس پڑوس کا جیسا ماحول پاتاہے ،اس سے مانوس ہوجاتاہےاور پھر ۔۔۔یوں ہوتاہے کہ وہ بھی انہیں میں سے ایک ہوجاتاہے۔
جیسا کہ رسول اسلام ﷺ کا ارشاد گرامی ہے:"کل مولود یولد علی الفطرۃ و ابواہ یھودانہ و ینصرانہ و یمجسانہ "یعنی ہر بچہ فطرت (اسلام )پر پیداہوتاہے اور پھر اس کےوالدین اس کو یہودی ،نصرانی یا مجوسی بنادیتے ہیں۔[1] ... باقی مطلب

آج کربلاء کی ضرورت کیوں ہے ؟مجلہ عشاق اہل بیت 16و17۔ربیع الثانی1438ھ

اریخ عالم کا دامن قربانیوں اور ثابت قدمی کی لازوال ایمان افروز داستانوں سے بھرا پڑا ہے۔ حضرت موسٰی 7کو دربار فرعون سے کس کس طرح کی اہانت کا سامنا نہیں کرنا پڑا مگر آپ کے پائے استقامت کو ذرہ برابر بھی جنبش نہ ہوئی ۔ حضر ت زکریا 7آرے سے چیر ڈالے گئے ([1]) مگر کوئی قوت ان کے ایمان میں شگاف ڈالنے میں کامیاب نہ ہوسکی۔پھر چشم فلک نے حضرت ابراہیم خلیل اللہ7 کو حیرت سے دیکھا حضرت ابراہیم 7کو کس کس مرحلے سے نہیں گزرنا پڑا۔ ترکِ وطن، ترکِ مال، ترکِ اولاد، ترکِ جان زرخیز زمین چھوڑ کر مکے کی بے آب و گیاہ میں بخوشی منتقل ہو گئے ([2] ... باقی مطلب

انوار قدسیہ۔ مجلہ عشاق اہل بیت 16و17۔ربیع الثانی1438ھ

بارہویں امام معصوم حضرت حجت بن الحسن المہد ی ، امام زمانہ (عجل اللہ تعالی فرجہ) نیمہ شعبان، ٢٥٥ ہجری ، شہر سامراء میں متولد ہوئے ۔[1]
آپ پیغمبر اکرمﷺ کے ہم نام (م ح م د) ہیں اور آپ کی کنیت بھی حضرت (ابوالقاسم) ہے ۔ لیکن معصوم نے امام زمانہ کا اصلی نام لینے سے منع کیا ہے ۔[2]
آپ کے والد کا نام امام حسن عسکری علیہ السلام اور والدہ کا نام نرجس ہے نرجس خاتون کو ریحانہ ، سوسن اور صقیل بھی کہا جاتا ہے آپ کی عظمت و معنویت اس قدر تھی کہ امام ہادی علیہ السلام کی بہن حکیمہ خاتون جوکہ خاندان امامت کی باعظمت خاتون ہیں ، آپ کو اپنے خاندان کی سردار اور اپنے آپ کو ان کی خدمت گزار کہتی تھیں ۔[3] ... باقی مطلب

غیرت کامفھوم نہج البلاغہ کی روشنی میں۔ مجلہ عشاق اہل بیت 16و17۔ربیع الثانی1438ھ

مقدمہ: قال علی علیہ السلام:" وعفتہ علی قدر غیرتہ " ترجمہ:اور{مردکی} عفت کا پیمانہ غیرت و حیا ہے۔[۱]
آج کے زمانے میں لفظ غیرت زبان زد عام ہے اور مختلف مواقع اور مناسبتوں سے کثرت سے سننے کے لیے ملتا ہے ۔ لیکن غیرت کے سلسلے میں عوام اور خواص کے ذہنوں میں کچھ ابہامات اور شکوک و شبہات پائے جاتے ہیں لہذا غیرت کے مفہوم اور اس کی اقسام سے آشنائی بہت ضروری ہے یہاں غیرت کے سلسلے میں امیرالمومنین علیہ السلام کے مندرجہ بالا فرمان کی روشنی میں کچھ عرائض قارئین کی خدمت میں پیش کرتے ہیں ۔ ... باقی مطلب

حیات طیبہ حضرت زہرا س)۔ مجلہ عشاق اہل بیت 16و17۔ربیع الثانی1438ھ

صدیقہٴ کبریٰ ، مادر ائمہ، جگر گوشہ رسول ، زوجہٴ علی بن ابی طالب،حضرت زہرا سلام الله علیہا کی ،ولادت باسعادت کی تاریخ پر ہم امام زمانہ (ع) اور تمام محبان اہل بیت علیہم السلام کوتبریک عرض کرتا ہوں۔ شہزادی کی ،ولادت کی مناسبت سے میں یہاں پر آپ کے حیات طیبہ کے حوالے سے کچھ فضائل بیان کرنے کی کوشش کرونگا ۔ مجھے امید ہے کہ میری یہ سعی بی بی کی بارگاہ میں قبول ہو۔ ... باقی مطلب

اداریہ۔ مجلہ عشاق اہل بیت 16و17۔ربیع الثانی1438ھ

آیت اللہ شیخ عیسیٰ قاسم بحرین کے نامور اور ممتاز علماء اور سیاسی قائدین میں سے ہیں۔ آپ بحرین کے دارالحکومت منامہ کے نزدیک ایک چھوٹے سے گاؤں "دراز" میں متولد ہوئے اور اپنی ابتدائی تعلیم وہاں ہی مکمل کی۔
دینی تعلیم ۱۹۶۰ء کی دہائی میں بحرین میں ہی شیخ "علوی الغرفی" کے حضور شروع کی اور پھر نجف اشرف تشریف لے گئے جہاں دیگر علماء کے علاوہ مرجع تقلید شہیدسید محمد باقر الصدر کے شاگر رہیں۔
۱۹۹۰ء کی دہائی میں اعلیٰ مذہبی تعلیم کی تکمیل کی خاطر شہر مقدس قم تشریف لے گئے جہاں انھوں نے حصول تعلیم کا سلسلہ جاری رکھتے ہوئے مرحوم آیت اللہ العظمی فاضل لنکرانی، آیت اللہ العظمی سید محمود ھاشمی اور آیت اللہ العظمی سید کاظم حائری سے فیض حاصل کیا۔۸ مارچ ۲۰۰۱ء تک قم میں رہائش پذیر رہنے کے بعد ایک دفعہ پھر وطن پلٹ آئے جہاں آپ کا وسیع پیمانے پر پُرجوش اور شاندار استقبال ہوا۔ یہاں آنے کے بعد آپ نے لوگوں کی تعلیم و تربیت اور شیعہ عوام کو آلِ خلیفہ کے ظلم و ستم سے آگاہ کرنے اور بیدار کرنے کی غرض سے نماز جمعہ کی ذمہ داری سنبھالی۔ ... باقی مطلب

انوار قدسیہ۔مجلہ عشاق اہل بیت 14و 15 ۔ ربیع الثانی 1437 ھ

آپؑ کی ولادت
علماء فریقین کی اکثریت کااس بات پراتفاق ہےکہ شمع ہدایت کے گیارہویں چراغ ، حجت خدا حضرت امام حسن عسکری علیہ السلام 8ربیع الثانی ۲۳۲ ہجری کو جمعہ کے دن جناب حدیثہ خاتون کے بطن سے بمقام مدینہ منورہ متولدہوئے ہیں۔ [1]
آپ کی ولادت کے بعد حضرت امام علی نقی علیہ السلام نے حضرت محمدمصطفی ﷺ کے رکھے ہوئے ”نام حسن بن علی“ سے موسوم کیا۔ ... باقی مطلب

سوال بھیجیں