زبان کا انتخاب
همارے ساتھ رهیں...
مقالوں کی ترتیب جدیدترین مقالات اتفاقی مقالات زیادہ دیکھے جانے والے مقالیں
■ سیدعادل علوی (27)
■ اداریہ (14)
■ حضرت امام خمینی(رہ) (7)
■ انوار قدسیہ (14)
■ مصطفی علی فخری
■ سوالات اورجوابات (5)
■ ذاکرحسین ثاقب ڈوروی (5)
■ ھیئت التحریر (14)
■ سید شہوار نقوی (3)
■ اصغر اعجاز قائمی (1)
■ سیدجمال عباس نقوی (1)
■ سیدسجاد حسین رضوی (2)
■ سیدحسن عباس فطرت (2)
■ میر انیس (1)
■ سیدسجاد ناصر سعید عبقاتی (2)
■ سیداطہرحسین رضوی (1)
■ سیدمبین حیدر رضوی (1)
■ معجز جلالپوری (2)
■ سیدمہدی حسن کاظمی (1)
■ ابو جعفر نقوی (1)
■ سرکارمحمد۔قم (1)
■ اقبال حیدرحیدری (1)
■ سیدمجتبیٰ قاسم نقوی بجنوری (1)
■ سید نجیب الحسن زیدی (1)
■ علامہ جوادی کلیم الہ آبادی (2)
■ سید کوثرمجتبیٰ نقوی (2)
■ ذیشان حیدر (2)
■ علامہ علی نقی النقوی (1)
■ ڈاکٹرسیدسلمان علی رضوی (1)
■ سید گلزار حیدر رضوی (1)
■ سیدمحمدمقتدی رضوی چھولسی (1)
■ یاوری سرسوی (1)
■ فدا حسین عابدی (3)
■ غلام عباس رئیسی (1)
■ محمد یعقوب بشوی (1)
■ سید ریاض حسین اختر (1)
■ اختر حسین نسیم (1)
■ محمدی ری شہری (1)
■ مرتضیٰ حسین مطہری (3)
■ فدا علی حلیمی (2)
■ نثارحسین عاملی برسیلی (1)
■ آیت اللہ محمد مہدی آصفی (3)
■ محمد سجاد شاکری (3)
■ استاد محمد محمدی اشتہاردی (1)
■ پروفیسرمحمدعثمان صالح (1)
■ شیخ الاسلام ڈاکٹر محمد طاہرالقادری (1)
■ شیخ ناصر مکارم شیرازی (1)
■ جواہرعلی اینگوتی (1)
■ سید توقیر عباس کاظمی (3)
■ اشرف حسین (1)
■ محمدعادل (2)
■ محمد عباس جعفری (1)
■ فدا حسین حلیمی (1)
■ سکندر علی بہشتی (1)
■ خادم حسین جاوید (1)
■ محمد عباس ہاشمی (1)
■ علی سردار (1)
■ محمد علی جوہری (2)
■ نثار حسین یزدانی (1)
■ سید محمود کاظمی (1)
■ محمدکاظم روحانی (1)
■ غلام محمدمحمدی (1)
■ محمدعلی صابری (2)
■ عرفان حیدر (1)
■ غلام مہدی حکیمی (1)
■ منظورحسین برسیلی (1)
■ ملک جرار عباس یزدانی (2)
■ عظمت علی (1)
■ اکبر حسین مخلصی (1)

جدیدترین مقالات

اتفاقی مقالات

زیادہ دیکھے جانے والے مقالیں

ماہ رمضان ،بہار قرآن۔ مجلہ عشاق اہل بیت 5۔ رجب ،شعبان،رمضان۔1420ھ

ترجمہ: سید علی عباد رضوی صاحب
حمد اس خد اکی جس نے قرآن کو ماہ رمضان میں نازل کیا ، اور صلوات وسلام ہو کائنات کے سردار ، قطب عالم امکان محمدؐوآل محمدؐ پر، اورانکے تمام دشمنوں پر لعنت ہو۔

اس میں کوئی شک کہ قرآن کریم خداوند حکیم کی کتاب ہے ، یہی وہ کتاب ہے جو متقین کی ہدایت اورمومنین کیلئے برہان ہے ، یہی وہ کتاب ہے جس کو اللہ نے ضائع اورتحریف ہونے سے اپنے علم وقدرت کے ذریعہ محفوظ رکھا، یہی نبی اعظم محمدؐ کیلئے ابدی معجزہ بن کر اتری ، یہی کتاب اپنی ذات وجوہر یت میں واضح ،اور فی ذاتہ ہر شئی کیلئے بیان ہے ، اس میں کامل ترین تبیان وافضل ترین روش ہے ، مگر کبھی قرآن کی تلاوت کرنے والا اپنے رب کی رحمت سے دور ہوتاہے (چونکہ رحمت خدا احسان کرنے والوں سے نزدیک ہوتی ہے)فہم قرآن سے محروم رہتاہے ،اسکے معانی سمجھنے سے قاصر رہتاہے ،اور قرآن کے لطائف واشارات اور باریک وعمیق نکات کو درک نہیں کرپاتا"بہت سے ایسے قرآن کی تلاوت کرنے والے ہیں کہ قرآن ان پر لعنت کرتا[1] ... باقی مطلب

ماہ محرم الحرام(۱۴۴۱ہجری) کاپہلابیان

اللہ تعالیٰ قرآن کریم میں ارشاد فرماتا ہے۔﴿وَمَنْ يُعَظِّمْ شَعَائِرَ اللَّهِ فَإِنَّهَا مِنْ تَقْوَى الْقُلُوبِ[1].جوشخص شعائر الٰہی کا احترام کرتا ہے۔تو یہ دلوں کی پاکیزگی اور تقویٰ کے باعث ہے۔
اس میں کوئی شک نہیں ہےکہ ہم شیعہ امامیہ ،ائمہ معصومین علیہم السلام کے چاہنے والے اور ان کے دوست داروں میں سے ہیں اور ہم اپنے عقیدے اور عمل میں ان کے مذہب کے پیروکا رہیں بیشک جو دلائل اور برہان ہمارے پاس ہے اُن پر ہمارا ایمان اور اعتقاد ہے اور ائمہ اطہار علیہم السلام کے حکم سے غیبت کبری ٰکے دوران ہم اپنے دینی اور فقہی اعمال کو صحیح انجام دینے کے لئے،چاہے عبادات میں سے ہو یا معاملات میں سے ،مجتہدین عظام اور جامع الشرائط فقیہ کی طرف رجوع کرتے ہیں ۔ ... باقی مطلب

ماہ محرم الحرام(۱۴۴۱ہجری) کاتیسرابیان

بیشک جس کےدل میں تقویٰ الہی ہو وہ شعائر الٰہی کا احترام اور تعظیم کرتا ہے۔ اسی طرح شعائر الٰہی میں سے عزیز اور ولی خدا سید الشہدا ؑامام حسین ؑ کے شعائرکوبھی محترم سمجھتا ہے ۔ وہ حسین ؑ جس کا ذکر عرش پرلکھا گیا ہے ۔ (الحسين مصباح هدىً وسفينة نجاة). بیشک امام حسینؑ ہدایت کا چراغ اور نجات کی کشتی ہیں ۔
(اِنَّ الْمُتَّقِيْنَ فِيْ جَنّٰتٍ وَّنَہَرٍ فِيْ مَقْعَدِ صِدْقٍ عِنْدَ مَلِيْكٍ مُّقْتَدِرٍ)بیشک صاحبان تقویٰ باغات اور نہروں کے درمیان ہوں گے اس پاکیزہ مقام پر جو صاحبِ اقتدار بادشاہ کی بارگاہ میں ہے۔ ... باقی مطلب

ماہ محرم الحرام(۱۴۴۱ہجری) کادوسرابیان

امام حسین ؑ اپنے والد گرامی کی طرح فرماتے ہیں : (دو قسم کے لوگوں نےمیری کمرکو توڑ دیاہے ایک وہ عالم جو گناہ کرنے سے پرواہ نہیں کرتا اور اپنے علم پر عمل بھی نہیں کرتا ۔ دوسرا وہ جاہل جو اپنے جہل پرعمل کرتے ہوئے عبادت انجام دیتا ہے اور جہالت کے ساتھ اپنے رب کی عبادت کرتا ہے۔
جوشخص مجالس اور عزاءحسینی کو جہالت اور اپنی خواہشات کے مطابق تشکیل دیتا ہےاس میں کوئی شک نہیں کہ اس نے اپنی جہل کے گھوڑوں کی ٹاپوں سے امام حسین علیہ السلام کے پشت مبارک کو روندھ ڈالاہے ، اور آپ ؑکے لا فانی انقلاب کی کمر توڑ دیا ہے ، اپنی جہل اور گمراہی کی وجہ سے امت مسلمہ اور بنی نوع بشرکے اصلاح کی بنیاد کو ختم کردیاہےبیشک امت مسلمہ لوگوں میں سے بہترین قوم ہے انہیں لوگوں کی ہدایت کے لئے بھیجا گیا ہے ، اور یہ کہ خدا نے سید المرسلین اور خاتم النبیین حضرت محمد ﷺ کے ذریعے ختم نبوّت اور رسالت پرمہر ثبت کردی ہے پس خدا نے آپﷺ کو ہدایت اور سچے دین کے ساتھ بھیجا تاکہ دین لٰہی سب تمام ادیان عالم پر غالب آجائے اور عنقریب آل محمّد علیہم السلام میں سےخاتم الاوصیاءاور عصارۃ الانبیاءحضرت مہدی موعود ارواحنالہ الفداء ظہور کرے گا جو زمین کو عدل وانصاف سے بھر دے گا جس طرح وہ ظلم اور جور سے بھر چکی ہوگی۔ ... باقی مطلب

نام: درنجف ہی کیوں؟

مترجم: حجۃ الاسلام السید ابن حسن النقوی ـ نجف اشرف
بتاریخ 4 ربیع الثانی 1435ہجری کومرزا ذہین نجفی دام عزہ سے ملاقات ہوئی توانھوں نے مجلہ درنجف ہدیہ دیا جس کو میں نے حضرت امیرالمومنین امام المتقین یعسوب الدین امام علی علیہ السلام کی حیات طیبہ سے مخصوص مضامین پرمشتمل پایا اورانھوں نے کہا کہ وہ اس سلسلے کوآگے بڑھانے کا ارادہ رکھتے ہیں اورمعصومین علیہم السلام میں سے ہرایک ذات مقدسہ کے متعلق ایک رسالہ شائع کرناچاہتے ہیں اورآنے والارسالہ انشاء اللہ سیدۃ النساء عصمۃ الکبریٰ وجہ تخلیق کائنات آیت الٰہی کی مصداق اولین ، منزل عبادت میں شب قدرکی عدیل ،حوراء انسیہ حضرت فاطمۃ الزہراء سلام اللہ علیہا سے مخصوص کیاہے ۔تومیں نے سوال کیا کہ اس سلسلے میں آپ کو رسول اسلام شافع محشر حضرت محمدمصطفی ﷺ سے کیوں نہیں شروع کیا؟ یہ سن وہ خاموش ہوگئے اورپھرکہنے لگے کہ ہم حضرت رسول اسلام ؐ سے ایک مجلہ مخصوص کریں گے جس کا عنوان "اصحاب کساء"ہوگا پھر میں نے کہا کہ آپ کوآنحضرت ﷺ ہی کے نام سے شروع کرناچاہیے تھاپھر اثناء گفتگومیں یہ خیال آیا کہ شاید حضرت علی ؑ سے اس لئے شروع کیاکہ آپ باب مدینۃ العلم ہیں یہ فکر ان کو پسند آئی اورانھوں نے کہا کہ آپ اس فکر کوتحریری شکل میں دیدیں۔تاکہ اس کو جناب زہراء سلام اللہ علیہا سے مخصوص مجلہ میں شائع کریں لہذا میں حضرت علی علیہ السلام سے اس مجلہ کو شروع کرنے کی وجہ بیان کررہاہوں جو اچانک سے میرے ذہن میں آئی ہے پس اگر اس فکرمیں ادبی اسلوبی اورفکری اعتبار سے کوئی نقص ہو تو میں پہلے ہی معذرت خواہ ہوں اوراہل علم ودانش کی نظر میں معذرت قابل قبول امرہے جیساکہ آنحضرت نے فرمایا:"انامدینۃ العلم وعلی بابھا"اورخداوندعالم فرماتاہے۔ "اتوالبیوت من ابوابھا" ... باقی مطلب

نبوت(چھٹی قسط)۔مجلہ عشاق اہل بیت6۔شوال ،ذیقعدہ ، ذی الحجہ ۔1420ھ

ترجمہ: علی رضا رضوی الہ آبادی
نبوت اصول دین اور ارکان دین میں سے ہے،نبوت کے سلسلہ میں دوطریقوں سے بحث کی جاتی ہے، پہلانبوت عامہ ،دوسرا نبوت خاصہ

جس میں یہ بحث ہو کہ نبوت کسے کہتے ہیں ،لوگوں کے درمیان اسکی کیاضرورت ہے، نبوت کی شرطیں کیاہیں اوراس کی معرفت اورپہچان کے طریقے کیاہیں اسے نبوت عامہ کہتے ہیں۔اور جس میں خاتم النبیّین کی نبوت کے بارے میں ، انکےمعجزات کے بارے میں خاص طور پر قرآن کی بابت گفتگو ہو اس کو نبوت خاصہ کہتے ہیں۔

پہلا طریقہ:نبی وہ انسان ہے جوکسی انسانی واسطہ کے بغیر اللہ کی طرف سے خبردے۔

بعثت کے بہت سے اغراض ومقاصدہیں جن تک نبوت کے بغیر رسائی ممکن نہیں ہے۔اس کی سب سے بہتر اورمحکم تر دلیل فطرت اور عقل سلیم ہے جو تمام شہوات اور گناہوں سے پاک ہو، کیونکہ جس طرح سے عقل وفطرت یہ گواہی دیتی ہے کہ خداموجود ہے یکتاویگانہ ہے ویسے ہی یہ اپنے رب سے ہدایت کی بھی طلبگار رہتی ہے کہ وہ تمام حقائق معارف جو انسان کو سعادت وبلندی کی راہ دکھاسکیں وہ اسے معلوم ہوں۔ ... باقی مطلب

نبوت(ساتویں قسط)۔مجلہ عشاق اہل بیت 7۔محرم ،صفر، ربیع الاول ۔1415ھ

نبوت اصول دین اور ارکان دین میں سے ہے،نبوت کے سلسلہ میں دوطریقوں سے بحث کی جاتی ہے، پہلانبوت عامہ ،دوسرا نبوت خاصہ

جس میں یہ بحث ہو کہ نبوت کسے کہتے ہیں ،لوگوں کے درمیان اسکی کیاضرورت ہے، نبوت کی شرطیں کیاہیں اوراس کی معرفت اورپہچان کے طریقے کیاہیں اسے نبوت عامہ کہتے ہیں۔اور جس میں خاتم النبیّین کی نبوت کے بارے میں ، انکےمعجزات کے بارے میں خاص طور پر قرآن کی بابت گفتگو ہو اس کو نبوت خاصہ کہتے ہیں۔ ... باقی مطلب

سوال بھیجیں