زبان کا انتخاب
همارے ساتھ رهیں...
مقالوں کی ترتیب جدیدترین مقالات اتفاقی مقالات زیادہ دیکھے جانے والے مقالیں
■ سیدعادل علوی (24)
■ اداریہ (14)
■ حضرت امام خمینی(رہ) (7)
■ انوار قدسیہ (14)
■ مصطفی علی فخری
■ سوالات اورجوابات (5)
■ ذاکرحسین ثاقب ڈوروی (5)
■ ھیئت التحریر (14)
■ سید شہوار نقوی (3)
■ اصغر اعجاز قائمی (1)
■ سیدجمال عباس نقوی (1)
■ سیدسجاد حسین رضوی (2)
■ سیدحسن عباس فطرت (2)
■ میر انیس (1)
■ سیدسجاد ناصر سعید عبقاتی (2)
■ سیداطہرحسین رضوی (1)
■ سیدمبین حیدر رضوی (1)
■ معجز جلالپوری (2)
■ سیدمہدی حسن کاظمی (1)
■ ابو جعفر نقوی (1)
■ سرکارمحمد۔قم (1)
■ اقبال حیدرحیدری (1)
■ سیدمجتبیٰ قاسم نقوی بجنوری (1)
■ سید نجیب الحسن زیدی (1)
■ علامہ جوادی کلیم الہ آبادی (2)
■ سید کوثرمجتبیٰ نقوی (2)
■ ذیشان حیدر (2)
■ علامہ علی نقی النقوی (1)
■ ڈاکٹرسیدسلمان علی رضوی (1)
■ سید گلزار حیدر رضوی (1)
■ سیدمحمدمقتدی رضوی چھولسی (1)
■ یاوری سرسوی (1)
■ فدا حسین عابدی (3)
■ غلام عباس رئیسی (1)
■ محمد یعقوب بشوی (1)
■ سید ریاض حسین اختر (1)
■ اختر حسین نسیم (1)
■ محمدی ری شہری (1)
■ مرتضیٰ حسین مطہری (3)
■ فدا علی حلیمی (2)
■ نثارحسین عاملی برسیلی (1)
■ آیت اللہ محمد مہدی آصفی (3)
■ محمد سجاد شاکری (3)
■ استاد محمد محمدی اشتہاردی (1)
■ پروفیسرمحمدعثمان صالح (1)
■ شیخ الاسلام ڈاکٹر محمد طاہرالقادری (1)
■ شیخ ناصر مکارم شیرازی (1)
■ جواہرعلی اینگوتی (1)
■ سید توقیر عباس کاظمی (3)
■ اشرف حسین (1)
■ محمدعادل (2)
■ محمد عباس جعفری (1)
■ فدا حسین حلیمی (1)
■ سکندر علی بہشتی (1)
■ خادم حسین جاوید (1)
■ محمد عباس ہاشمی (1)
■ علی سردار (1)
■ محمد علی جوہری (2)
■ نثار حسین یزدانی (1)
■ سید محمود کاظمی (1)
■ محمدکاظم روحانی (1)
■ غلام محمدمحمدی (1)
■ محمدعلی صابری (2)
■ عرفان حیدر (1)
■ غلام مہدی حکیمی (1)
■ منظورحسین برسیلی (1)
■ ملک جرار عباس یزدانی (2)
■ عظمت علی (1)
■ اکبر حسین مخلصی (1)

جدیدترین مقالات

اتفاقی مقالات

زیادہ دیکھے جانے والے مقالیں

تحریف القرآن۔ مجلہ عشاق اہل بیت 10-شوال 1434ھ

دلائل قرآنی :
اس مضمون کے تحت بھی ہم تین دلائل کے ذکر کرنے پر اکتفاء کریں گے اگرچہ عدم تحریف پر دلالت کرنے والی آیات فراوان ہیں ۔
(الف) دلیل آیت ذکر:
’’اِنَّا نَحن نزَّلنا الذِّکر واِنّا لہ لَحافِظون‘‘’’ہم نے ہی اس ذکر(قرآن )کو نازل کیا ہے اور ہم ہی اس کی حفاظت کرنے والے ہیں‘‘(۱۸)

اس آیت کی صراحت کو ذرا آپ ملاحظہ تو کریں کہ کس قدر صاف و شفاف لہجے میں خداوند عالم اپنے اس نازل کردہ کتاب کی حفاظت کی ذمہ داری اپنے اوپر لے رہا ہے اور یہ بات سب جانتے ہیں کہ جس چیز کا خدا ارادہ کر لے تو پھر خدا کے ارادے کا جھوٹ ہونا ناممکن ہے ، پس جو خدا کانٹوں کے درمیان پھول کی نگہداری کر سکتا ہے وہ یقینا ظلوم و جہول انسانوں کے درمیان اپنی امانت کی بھی حفاظت کرنا جانتا ہے ۔(۱۹)بعض لوگوں نے یہاں ذکر سے مراد پیغمبراکرم ؐ ہونے کا احتمال دیا ہے جن سے عرض یہی ہے کہ اگر آیت کے سیاق و سباق پر اگر ایک نگاہ ڈال دیا جائے تو خود بخود سمجھ میں آئے گا کہ یہاں ذکر سے مراد قرآن مجید ہے نہ پیغمبر اسلام ؐکیونکہ اسی آیت سے تین آیات قبل قرآن کے لئے ذکر کا لفظ استعمال کیا ہے : ... باقی مطلب

اقبال ؒاورقوموں کےعروج وزوال کےاسباب۔مجلہ عشاق اہل بیت 14و 15۔ ربیع الثانی 1437 ھ

کائنات کا یہ نظام جوایک حکیم وداناخالق کی تصویرکشی ہے،اس عظیم مصورنے جس طرح کامل اورحسین ترین تصویر کی نقاشی کی ہے اسی طرح اس حکیم نے اپنی حکمت بے مثال سے اس نظام کی بقاء واستمرار کے لیے کچھ قواعد وضوابط اوراصول وضع فرمائے ہیں۔
جوخود ذات لم یزل کی زبان میں سنت الٰہی اور فطرت اللہ سے مسمٰی ہے۔اور ان سنن الٰہی سے کائنات کا کوئی بھی ذرہ سرموانحراف نہیں کر سکتا۔[1]یہ کائناتی ضابطے اورقوانین افراد سے لے کرخاندانوں ،قوموں،ملکوں،تہذیبوں اور حکومتوں تک کے عرو ج وزوال کو شامل ہیں۔ ... باقی مطلب

تحریف قرآن -مجلہ عشاق اہل بیت9۔ربیع الثانی 1434ھ

خدا وند قدوس نے جہاں انسان کو تمام مخلوقات کا ہدف ِ خلقت قرار دیکر اشرف المخلوقات کے عنوان سے صفحہ ہستی پر بھیج دیا وہاں اس اشرف المخلوقات انسان کو بھی دیگر اپنی مخلوقات کی طرح عبث اور بے ہدف خلق نہیں فرمایا بلکہ جتنا اس مخلوق کو عظیم و برتر بنایا اس کا ہدف ِ خلقت بھی معرفت ِ الٰہی کے عرش پر قرار دیا ۔لیکن ’’مِن بَینِ الصُّلبِ وَ التَّرائِب ‘‘ (۱)سے اپنے سفر کا آغاز کرنے والے انسان کے لئے معرفت الٰہی کے عرش پر قدم جمانا ایک ناممکن عمل تھا لہٰذا خداوند عالم نے احسان و امتنان کرتے ہوئے ہدایت و رہنمائی کا ایک نہ ختم ہونا والے سلسلے کا آغاز فرمایا ۔ اسی تسلسل میں امّت محمد ؐ کی ہدایت کے لئے اسے نسخ ناپذیر رسالت و نبوت ، قانون و شریعت اور کتاب و حکمت سے نوازا ، خدا وند قدوس نے ایسی کتاب اپنے آخری نبی کے ذریعے اس امّت کے حوالے کردیا ،جس کی مثال اولین و آخرین میں کوئی نہیں لا سکتا ۔ ... باقی مطلب

سوال بھیجیں