زبان کا انتخاب
همارے ساتھ رهیں...
مقالوں کی ترتیب جدیدترین مقالات اتفاقی مقالات زیادہ دیکھے جانے والے مقالیں
■ سیدعادل علوی (24)
■ اداریہ (14)
■ حضرت امام خمینی(رہ) (7)
■ انوار قدسیہ (14)
■ مصطفی علی فخری
■ سوالات اورجوابات (5)
■ ذاکرحسین ثاقب ڈوروی (5)
■ ھیئت التحریر (14)
■ سید شہوار نقوی (3)
■ اصغر اعجاز قائمی (1)
■ سیدجمال عباس نقوی (1)
■ سیدسجاد حسین رضوی (2)
■ سیدحسن عباس فطرت (2)
■ میر انیس (1)
■ سیدسجاد ناصر سعید عبقاتی (2)
■ سیداطہرحسین رضوی (1)
■ سیدمبین حیدر رضوی (1)
■ معجز جلالپوری (2)
■ سیدمہدی حسن کاظمی (1)
■ ابو جعفر نقوی (1)
■ سرکارمحمد۔قم (1)
■ اقبال حیدرحیدری (1)
■ سیدمجتبیٰ قاسم نقوی بجنوری (1)
■ سید نجیب الحسن زیدی (1)
■ علامہ جوادی کلیم الہ آبادی (2)
■ سید کوثرمجتبیٰ نقوی (2)
■ ذیشان حیدر (2)
■ علامہ علی نقی النقوی (1)
■ ڈاکٹرسیدسلمان علی رضوی (1)
■ سید گلزار حیدر رضوی (1)
■ سیدمحمدمقتدی رضوی چھولسی (1)
■ یاوری سرسوی (1)
■ فدا حسین عابدی (3)
■ غلام عباس رئیسی (1)
■ محمد یعقوب بشوی (1)
■ سید ریاض حسین اختر (1)
■ اختر حسین نسیم (1)
■ محمدی ری شہری (1)
■ مرتضیٰ حسین مطہری (3)
■ فدا علی حلیمی (2)
■ نثارحسین عاملی برسیلی (1)
■ آیت اللہ محمد مہدی آصفی (3)
■ محمد سجاد شاکری (3)
■ استاد محمد محمدی اشتہاردی (1)
■ پروفیسرمحمدعثمان صالح (1)
■ شیخ الاسلام ڈاکٹر محمد طاہرالقادری (1)
■ شیخ ناصر مکارم شیرازی (1)
■ جواہرعلی اینگوتی (1)
■ سید توقیر عباس کاظمی (3)
■ اشرف حسین (1)
■ محمدعادل (2)
■ محمد عباس جعفری (1)
■ فدا حسین حلیمی (1)
■ سکندر علی بہشتی (1)
■ خادم حسین جاوید (1)
■ محمد عباس ہاشمی (1)
■ علی سردار (1)
■ محمد علی جوہری (2)
■ نثار حسین یزدانی (1)
■ سید محمود کاظمی (1)
■ محمدکاظم روحانی (1)
■ غلام محمدمحمدی (1)
■ محمدعلی صابری (2)
■ عرفان حیدر (1)
■ غلام مہدی حکیمی (1)
■ منظورحسین برسیلی (1)
■ ملک جرار عباس یزدانی (2)
■ عظمت علی (1)
■ اکبر حسین مخلصی (1)

جدیدترین مقالات

اتفاقی مقالات

زیادہ دیکھے جانے والے مقالیں

تفسیرسورہ کوثر۔مجلہ عشاق اہل بیت 3۔ ربیع الثانی،جمادی الاول، جمادی الثانی ۔1415ھ

بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيمِ" إِنَّا أَعْطَيْنَاكَ الْكَوْثَرَ فَصَلِّ لِرَبِّكَ وَانْحَرْ إِنَّ شَانِئَكَ هُوَ الْأَبْتَرُ الكوثر"
ترجمہ:بیشک ہم نےآپ کوکوثر عطاکیا، لہذا آپ لئے نمازپڑھیں اورقربانی دیں ،یقیناً آپ کادشمن بے اولاد رہے گا۔
شان نزول :اس سورہ کو سورہ اعطینااورسورہ کوثر کہاجاتاہے۔ احتمال د یاگیا ہے کہ یہ سورہ مقام منیٰ پر نازل ہوا تھا اسلئے اس جگہ کو"مسجد کوثر"کہاجاتاہے اورحجاج بڑے جوش وجذبہ کے ساتھ اسکی زیارت کو جاتے ہیں۔
یہ سورہ” مکّہ “ میں نازل ہوا ہے ۔ لیکن بعض مفسرین کے بقول مدینہ میں نازل ہوا ہے ۔اور بعض کاکہناہے کہ دو مرتبہ نازل ہوا ہے ۔
کفار قریش میں سے "عا ص بن وائل" مسجد سے نکلتے وقت رسول خداؐ سے گفتگو کرنے لگا قر یش کا ایک گروہ مسجد میں بیٹھایہ منظر دیکھ رہا تھا ۔ ... باقی مطلب

مواعظ ونصائح۔مجلہ عشاق اہل بیت 3۔ ربیع الثانی،جمادی الاول، جمادی الثانی ۔1415ھ

خداوندعالم ارشاد فرماتاہے ۔"لاتشرک بااللہ" یعنی اللہ کیلئے شریک قرار نہ دو۔
1۔ رسول اکرم ؐ نے فرمایا:" من اکثر الاستغفار جعل الله له من کل هم فرجا و من کل ضیق مخرجا و یرزقه من حیث لایحتسب"
ترجمہ: جوشخص زیادہ استغفار کرتاہے خدا اسکو ہرغم سے نجات اورہرتنگی سے کشادگی اورایسی جگہسے اسے رزق عطاکرتاہے جہاں سے گمان بھی نہ ہو۔
2۔ امیرالمومنینؑ نے فرمایا:" خذوا من کل علم ارواحہ ودعوا ظروفہ فان العلم کثیروالعمرقصیر"
ترجمہ: ہر علم سے اس کا لب لباب حاصل کرلو اور(بقیہ)اسکے اطراف کوچھوڑدو کیونکہ علم بہت ہیں درحالیکہ عمرکوتاہ ہے۔
3۔ معصومہ کونینؑ نے فرمایا: ویل لامراۃ اغضبت زوجھا وطوبیٰ لامراۃ رضی عنھازوجھا"
ترجمہ: وای ہو اس عورت پرجو اپنے شوہر کوناراض کرے اورخوشابحال اس عورت کیلئے جس کا شوہر اس سے خوش رہے۔ ... باقی مطلب

انوار قدسیہ۔مجلہ عشاق اہل بیت 3۔ ربیع الثانی،جمادی الاول، جمادی الثانی ۔1415ھ

نام ونسب :فاطمہ بنت رسول اللہ حضرت محمدمصطفی ﷺ ۔
مشہورالقاب:زہرا،بتول ،سیدۃ النساء العالمین، صدیقہ،طاہرہ
کنیت:ام ابیہا،ام الحسنین ،ام الائمہ۔
پدربزرگوار: محمدرسول اللہ۔
مادرگرامی: خدیجہ بنت خویلد۔
ولادت: روز جمعہ 20 جمادی الثانیہ بعثت کے دوسرے یاپانچویں سال۔
جائے ولادت: مکہ مکرمہ
مدت حیاتَ:18 سال ... باقی مطلب

اداریہ۔ مجلہ عشاق اہل بیت 3۔ ربیع الثانی،جمادی الاول، جمادی الثانی ۔1415ھ

دنیا میں موجود ہرقوم کیلئے اس کی ایک خاص تہذیب اورقومیت ہوتی ہے جو اس کاطرہ امتیاز ہوتی ہے،ہرقوم جہاں تک ممکن ہوتاہے اس خاص تہذیب کیلئے کوشاں رہتی ہے،جذبہ قومیت توبعض دفعہ جذبہ دین سے بھی بڑھکر ہوجاتاہے،ہم نے بہت سی قوموں کودیکھاہے کہ جو اپنے "قومی مذہب" کااتنا خیال نہیں رکھتیں جتنا اپنے قومی تہواروں پرزور دیتی ہیں۔
چونکہ جذبہ قوم انسانی طبیعت میں شامل ہے اوردین ومذہب کے بہت سے احکام ماوراء طبیعت ہوتے ہیں جنہیں عام انسانی طبیعت بہ آسانی قبول نہیں کرتی، اسی لئے اکثر لوگ قومی جشن میں دین کوپیچھے چھوڑ دیتے ہیں۔
حقیقی متدین وہ ہوتاہے جسکی "قومیت"کی حدیں اسکے دین کی حدوں سے تجاوز نہ کریں ۔البتہ کبھی ایسا بھی ہوتاہے کہ بعض دینی احکام قومیت کی علامت بن جایاکرتے ہیں ،ایسے وقت میں قومیت وتدین میں چندان اختلاف باقی نہیں رہ جاتا۔ ... باقی مطلب

معصوم اول:خاتم الانبیاءؐ۔مجلہ عشاق اہل بیت 1۔ شوال ،ذی الحجہ 1414 ھ

معصومین ؑ کی حیات طیبہ کامختصرتذکرہ
معصوم اول۔ خاتم الانبیاءؐ

آپ کانام اورآپ کاحسب ونسب:

محمدبن عبداللہ بن عبدالمطلب بن ہاشم بن عبدمناف قصی بن کلاب بن مرہ بن لوی بن غالب بن فہر بن نضربن کنانہ بن حزیمہ بن مدرکہ بن الیاس بن مضربن نزار بن معدبن عدنان تھا۔نیز آپ نے فرمایاجب میرانسب عدنان تک پہونچے تووہیں روک دو۔ ... باقی مطلب

اداریہ - مجلہ عشاق اہل بیت 2۔ محرم،صفر ، ربیع الاول ۔1415ھ

سن اکسٹھ ہجری میں جگرگوشہ رسولؐ ، نورعین علیؑ وبتولؑ حضرت امام حسین علیہ السلام کی اپنے بہتر اصحاب کے ساتھ ،شہادت کیاایک معمولی شہادت تھی؟ کیادوشہزادوں کی اپنامقصدحاصل کرنے کیلئے جنگ تھی؟ جیساکہ دشمنان دین مشہورکرتے ہیں۔اگریہ معمولی واقعہ ہوتاتوخداوندعالم نے پہلے ہی کیوں امام حسینؑ کی شہادت اورانکے اہل بیتؑ کی اسارت کی خبراپنے رسولؐ کودے دی تھی؟

انبیاء و اوصیاء امام حسینؑ پر کیوں گریہ فرماتے تھے؟

خاتم الانبیاءؐ اورجناب سیدہ کی امام حسین ؑ پرگریہ کی وجہ کیاتھی؟

دنیابھرکے شیعہ دیوانہ وارحسینؑ کاغم کیوں مناتے ہیں؟

صدراسلام سے لیکرآج تک روزعاشورروز عاشورا علماء اورمراجع کے نزدیک خاص اہمیت کاحامل کیوں رہاہے؟ ... باقی مطلب

اداریہ ۔ مجلہ عشاق اہل بیت 1۔ شوال ،ذی الحجہ 1414 ھ

مجلہ کانام عشاق اہل بیتؑ کیوں؟

شیعہ سنی کے درمیان تواتر کیساتھ یہ حدیث نقل ہوئی ہے جس میں رسول اکرم ﷺ ختمی مرتبت سرکار دوعالم نے ارشادفرمایاہے۔"ستفترق امتی علی ثلاث وسبعین فرقۃ واحدۃ منھاناجیۃ والباقی من الھالکین"عنقریب میری امت کے مابین تہترفرقے ہوجائیں گے ان میں سے ایک فرقہ نجات یافتہ ہوگااوربقیہ دوسرے جہنمی ہوں گے۔ ... باقی مطلب

وصیت نامہ سے اقتباس - مجلہ عشاق اہل بیت 1۔ شوال ،ذی الحجہ 1414 ھ

ہمیں فخر ہے کہ ہم اس مذہب کے پیروہیں جس کی بنیاد خداکے حکم سے رسول خداﷺ نے رکھی ہے ،انسان کوغلامی کی زنجیروں سے آزاد کرانے کی ذمہ داری ،ہرقسم کی قیدوبندسے آزاد(خداکے)بندے امیرالمومنین ؑ کوسونپی گئی ہے۔ ہمیں فخر ہے کہ "نہج البلاغہ "جوقرآن کے بعدمادی اورمعنوی زندگی کا عظیم ترین دستوراورانسانوں کوآزادی بخشنے والی اعلیٰ ترین کتاب ہے اوراس کے حکومتی اورمعنوی احکام وفرامین بہترین راہ نجات ہیں ،ہمارے معصوم امام سے تعلق رکھتی ہیں۔

... باقی مطلب

دعا عبادت کامغز ہے ۔

ترجمہ: ذاکرحسین ثاقب ڈوروی
خداوندحکیم قرآن کریم میں ارشاد فرماتےہیں:"وَإِذَا سَأَلَكَ عِبَادِي عَنِّي فَإِنِّي قَرِيبٌ أُجِيبُ دَعْوَةَ الدَّاعِي إِذَا دَعَانِي فَلْيَسْتَجِيبُوا لِي وَلْيُؤْمِنُوا بِي لَعَلَّهُمْ يَرْشُدُونَ"[1]اور (اے پیغمبر) جب تم سے میرے بندے میرے بارے میں دریافت کریں تو (کہہ دو کہ) میں تو (تمہارے) پاس ہوں جب کوئی پکارنے والا مجھے پکارتا ہے تو میں اس کی دعا قبول کرتا ہوں تو ان کو چاہیے کہ میرے حکموں کو مانیں اور مجھ پر ایمان لائیں تاکہ نیک راستہ پائیں۔

یہ بات مخفی نہ رهے که لفظ (لعل) مذکوره آیت مین یقین کےمعنی میں آیا هے۔ کیونکه خدا کا علم هر چیز پر چھایا هوا هے اور اس کا ذکر کلام میں بلاغت کی خاطر هے جیسا که اسے اپنی جگه ذکر کیا گیا ہے پس آغاز آیت کا نتیجه هدایت و کامیابی هے پس غور کیجیے۔ ... باقی مطلب

حسن اور احسن قرآن کی روشنی میں۔ مجلہ عشاق اہل بیت 16و17۔ربیع الثانی1438ھ

ترجمہ: ذاکرحسین ثاقب
"يا مقلب القلوب والأبصار يا مدبّر الليل والنهار، يا محول الحول والأحوال، حوّل حالنا إلى أحسن حال"

اےدلوں کو پھیرنے والے اور بصارت کو پھیرنے والے ، اے رات اور دن کی تدبیر کرنے والے (اللہ)، اے حال اور احوال کو اپنی تحویل میں لینے والے، ہمارے حال کو اچھے (بہترین) حال میں بدل۔

بتحقیق دار دنیا میں انسان کیلئے سختی اور راحتی دونوں پایاجاتاہے۔ جس میں خوبصورتی بھی ہے بدصورتی بھی، روشنی بھی ہے اور تاریکی بھی ،اچھائی بھی ہے اور برائی بھی ، حق بھی ہے باطل بھی، دن بھی ہے رات بھی ، علم بھی ہے جہالت بھی، اچھے بھی ہے اور برے بھی، وغیرہ۔

حسن اس کو کہتے ہیں جو طبیعت کو خوشگوار اور مرغوب لگے۔ یعنی ہر وہ چیز جو خوشی اور سرور کاموجب بنتی ہے، جس کی طرف میلان، رجحان اور رغبت زیادہ ہو۔

حسن کی چند قسمیں ہیں۔

1۔ جو عقل کے لحاظ سے حسن اور مستحسن ہے یعنی جس کے بارے میں عقل حکم لگائے ۔ جس سےحسن عقلی ذاتی کہاجاتاہے۔

2۔ جس کی اچھائی کے بارے میں شارع مقدس حکم لگائے۔ جس سے حسن شرعی کہاجاتاہے۔

3۔ نفسانی غرائزو ملکات نفسانی جو باطنی صفات سے عبارت ہے۔

4۔ جو حواس ظاہری کے لحاظ سے اچھا اور مستحسن ہے۔ ... باقی مطلب

سوال بھیجیں